Web Analytics Made Easy -
StatCounter

Adab Silsila Magazine Quarterly – ادب سلسلہ سہماہی

500.00

1 Year Subscription

DELIVERY FREE

Description

Adab Silsila Magazine Quarterly, ادب سلسلہ سہماہی

1 Year Subscription

FREE DELIVERY

تازہ شمارہ ادب سلسلہ کی ایک جھلک 

لندن میں انیس سو پینتیس میں سجاد ظہیر نے ترقی پسند تحریک کی بنیاد اپنے چند دوستوں کےساتھ رکھی ۔١٩٣٦ میں سجاد ظہیر ہندوستان آئے تو ترقی پسند تحریک کی فضا تیار ہوچکی تھی۔ پریم چند سمیت اس وقت کے بیشتر لکھنے والے ترقی پسند تحریک کا حصہ بن چکے تھے۔ یہ تحریک اس وقت کی بڑی ضرورت تھی ۔ ایک طرف آزادی سے مکالمہ ہورہاتھا تو دوسری طرف فرقہ پرستی اور فسطائی اذہان کے خلاف مورچہ لیا جارہاتھا۔ ترقی پسند تحریک کی پہلی کانفرنس کے دوران ، جس میں پریم چند نے تاریخی خطبہ دیاتھا، اس وقت جب کانفرنس کیلئے جگہ کی تلاش شروع ہوئی تو ایک عمارت میں اس وقت گﺅ رکشہ کو لے کر جلسہ ہورہا تھا۔ آج آزادی کے ستر برسوں بعد ایک بار پھر انسانی عظمت کھوگئی ہے ۔ اور گﺅ رکشہ کے نام پر قاتل اسلحہ لئے گھوم رہے ہیں۔ اس وقت بھی مخصوص فسطائی ذہن ہندوستان پر مسلط تھا۔ اور آج دیکھئے اسی فسطائی طاقت نے ہندوستان کو اپنا یرغمال بنالیا ہے ۔ میں اسی لئے کہتی ہوں کہ یہ ترقی پسندt تحریک کا دوسرا دور ہے ۔
ملک کی موجودہ فضا میں خوشی کے نغمے نہیں گائے جاسکتے ۔ الجھی الجھی علامتوں اور استعاروں کا سہا را لے کر ادب تخلیق نہیں کیاجاسکتا ۔ ادب کو کیسا ہوناچاہئے ، پریم چند کے تاریخی خطبہ سے یہ اقتباس دیکھئے ۔
”جس ادب سے ہمارا ذوق صحیح بیدار نہ ہو، روحانی اور ذہنی تسکین نہ ملے، ہم میں قوت و حرارت نہ پیدا ہو، ہمارا جذبہ حسن نہ جاگے، جو ہم میں سچا ارادہ اور مشکلات پر فتح پانے کے لیے سچا استقلال نہ پیدا کرے وہ آج ہمارے لیے بیکار ہے۔ اس پر ادب کا اطلاق نہیں ہوسکتا۔“
…..
”ہماری کسوٹی پر وہ ادب کھرا اترے گا جس میں تفکر ہو، آزادی کا جذبہ ہو، حسن کا جوہر ہو، تعمیر کی روح ہو، زندگی کی حقیقتوں کی روشنی ہو، جو ہم میں حرکت، ہنگامہ اور بے چینی پیدا کرے۔ سلائے نہیں کیونکہ اب اور زیادہ سونا موت کی علامت ہوگی۔“
ترقی پسندی لوٹ آئی ہے ۔ اس کو لوٹنا ہی تھا۔ ان تین برسوں میں بیشتر تحریروں پر ترقی پسندی کے مزاج و اثرات کو دیکھا جاسکتا ہے۔

ادب سلسلہ کے پچھلے نمبر 

“اگر سر سید نہ ہو تے”  نمبر 

ادب سلسلہ خواتین نمبر

“ادب سلسلہ” کا  پہلا شمارہ افسانہ نمبر                                                                              

Reviews

There are no reviews yet.

Be the first to review “Adab Silsila Magazine Quarterly – ادب سلسلہ سہماہی”

Your email address will not be published.

Product categories

Top rated products

Product tags